123

حکمت عملی تبدیل کرکے سینیٹ، ضمنی الیکشن میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا: فضل الرحمان

پشاور: (سماء نیوز) پاکستان ڈیمو کریٹک موومٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ اور امیر جمعیت علمائے اسلام (ف) مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ استعفوں کے حوالے سے آئینی ماہرین نے بھی رائے دی، حکمت عملی تبدیل کرکے سینیٹ،ضمنی الیکشن میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا، اگرحصہ نہ لیتے تونااہلوں سے سینیٹ بھرجاتا۔ عمران خان تم ہمارے احتساب کی باتوں کوبھول جاؤپہلے اپنی جان چھڑاؤ۔

پشاور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ سینیٹ انتخابات کے لیے ہمیں حکمت عملی طے کرنی ہوگی،

صحافی کی طرف سے سوال کیا گیا کہ وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید بار بار کہہ رہا ہے کہ مولانا کے ساتھ ہاتھ ہوگیا ہے، جس پر جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ شیخ صاحب کے ساتھ خود کتنی بار ہاتھ ہوچکے ہیں بتائیں۔

جمعیت علما اسلام (ف)کولیبیا،عراق سے فنڈنگ کے سوال پرمولانا نے قہقہہ لگاتے ہوئے کہا کہ یہ پہلے اپنا توجواب دیں، فنڈنگ کیس، اوپن ٹرائل کے حوالے سے صرف بیان دیا گیا، فنڈنگ کیس ان کے گلے میں پھندہ ہے، عمران خان تم ہمارے احتساب کی باتوں کوبھول جاؤپہلے اپنی جان چھڑاؤ۔

فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ فاٹا کا انضمام ابھی تک مقامی لوگوں نے تسلیم نہیں کیا۔ فاٹا کے انضمام پرنظرثانی کی ضرورت ہے، عدالتوں کوحقائق کی بنیاد پراس مسئلے کودیکھنا ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ اٹھارویں ترمیم کوہاتھ ڈالنے کا مقصد ملک کوتقسیم کرنے کے مترادف ہوگا، ایک ادارے نہیں پاکستان کومضبوط بنانا ہوگا، دفاعی بجٹ میں کمی سے دفاع کوکمزورکردیا گیا، یہ کہاں تک ملک کوڈبونا چاہتے ہیں۔ ہم نےقوم بن کرملک کوبچاناہے، پی ڈی ایم بہترین طریقےسےاپنےکارڈکھیل رہی ہے

پی ڈی ایم سربراہ کا کہنا تھا کہ 5 فروری کوکشمیریوں سےاظہاریکجہتی کریں گے، 9 فروری کوحیدرآبادمیں کامیاب جلسہ کریں گے، حکمران بیوقوف اورحماقتوں کےدریاؤں میں ڈوبےہوئےہیں، حکمراں اپنےمستقبل سےبےپرواہیں،انکامستقبل تاریک ہے، جوہماری جماعت کاحصہ نہیں،ان کی باتوں کاکیانوٹس لینا، استعفوں کےحوالےسےآئینی ماہرین نےبھی رائےدی، حکمت عملی تبدیل کرکےسینیٹ،ضمنی الیکشن میں حصہ لینےکافیصلہ کیا، ضمنی الیکشن میں عوام کی رائےصحیح طورپرسامنےآئی، ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نےحکومت کی کرپشن کابھانڈاپھوڑدیا،فضل الرحمان ضرورت ہےکہ حکومت کاخاتمہ اورشفاف انتخابات ہوں۔

انہوں نے کہا کہ نیب والے بارگین کرکے رشوتیں وصول کررہے ہیں، نیب کا مجھ پر حملہ پوری جمعیت علما اسلام پرحملہ سمجھا جائے گا،زورلگانے والے خاطرجمع رکھیں، نیب کچھ بھی نہیں ہے اب نیب خطرے میں ہے، کل جوبھی حکومت آئے گی نیب کوختم کردے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں