35

سشانت سنگھ راجپوت کیس میں نیا موڑ، پولیس کو سابق اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی تلاش

ممبئی: (ویب ڈیسک) بالی ووڈ کے آنجہانی اداکار سشانت سنگھ راجپوت کے کیس میں نیا موڑ آ گیا ہے، پولیس نے ان کے سابق سابق اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی تلاش شروع کردی ہے۔ الزام ہے کہ اس نے اداکار کو منشیات دی تھی۔

خیال رہے کہ سشانت سنگھ راجپوت کی گزشتہ سال 14 جون کو پراسرار حالت میں موت ہو گئی تھی۔ ان کی لاش ان کے کمرے سے برآمد ہوگئی تھی۔ اس کے بعد ان کی موت کو لے کر کئی تنازع کھڑے ہوئے تھے۔

آنجہانی اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی موت کو اب 7 ماہ سے زیادہ عرصہ ہونے کو آیا ہے لیکن اب تک ان کی ہلاکت ایک معمہ بنی ہوئی ہے۔ ان کی موت کی تفتیش کی ذمہ داری انڈیا کے خفیہ ادارے سی بی آئی کو دی گئی ہے۔

اس کے علاوہ نارکوٹکس کنٹرول بیورو بھی منشیات کو لے کر الگ سے تفتیش کر رہا ہے۔ خبریں ہیں کہ پولیس سشانت سنگھ کے سابق اسسٹنٹ ڈائریکٹر رشی کیش پوار کی تلاش کر رہی ہے۔ وہ طویل وقت سے فرار ہے۔ الزام ہے کہ رشی کیش پوار بھی سشانت سنگھ راجپوت کو منشیات سپلائی کرتا تھا۔

رشی کیش پوار کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ اس نے کچھ وقت تک سشانت سنگھ کے ساتھ کام کیاتھا، لیکن گزشتہ سال اسے ہٹا دیا گیا تھا لیکن اس کے باوجود وہ مسلسل سشانت سنگھ سے ملنے کے لئے ان کے فلیٹ پر جاتا تھا۔

پولیس ملزم سے پوچھ گچھ کرنا چاہتی ہے لیکن وہ حاسا معاملے پر تعاون نہیں کر رہا۔ سمن جاری ہونے کے باوجود پوار نے پوچھ گچھ کے لئے آنے سے منع کردیا تھا۔ اس کے بعد سے اس کیس میں ان کا کردار مشکوک مانا جا رہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں