29

7 افراد شہید، 72 سے زائد زخمی

پشاور: (سماء نیوز) پشاور کے علاقے دیر کالونی زرگر آباد کے مدرسے میں دھماکے میں 7 افراد شہید جبکہ 72 سے زائد زخمی ہوگئے، جنہیں طبی امداد کے لئے قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

 متعدد کی حالت تشویشناک ہے۔ ریسکیو حکام کے مطابق دھماکا مدرسہ کے مرکزی ہال میں ہوا، پولیس کے مطابق دھماکے کی نوعیت معلوم کی جا رہی ہے۔ ریسکیو، امدادی ٹیمیں اور بم ڈسپوزل سکواڈ موقع پر پہنچ گیا۔

 ایس پی سٹی کا کہنا ہے کہ مشکوک شخص صبح 8 بجے مدرسہ میں داخل ہوا، مدرسے میں بارودی مواد سے بھرا بیگ رکھا گیا، دھماکا آئی ای ڈی سے کیا گیا، دھماکے کے وقت بچے حصول تعلیم میں مصروف تھے۔ پولیس کے مطابق مدرسے میں داخل ہونے والے مشکوک شخص کی تلاش جاری ہے۔

معاون خصوصی اطلاعات کامران بنگش نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا دھماکا امن کو ثبوتاژ کرنے کی ناکام کوشش ہے، دھماکے میں ہونے والے مالی و جانی نقصان افسوسناک ہے، ریسکیو آپریشن جاری ہے، زخمیوں کو تمام تر طبی سہولیات مہیا کی جا رہی ہے، دھماکے کی نوعیت کی جانچ پڑتال کی جا رہی ہے۔

شوکت یوسفزئی نے کہا دھماکا قابل مذمت اور بزدلانہ کارروائی ہے، بچوں کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے، دہشتگرد ہمیشہ سافٹ ٹارگٹ کو نشانہ بناتے ہیں، اے پی ایس کے بعد یہ دوسرا بڑا سانحہ ہے، عرصہ دراز سے پشاور میں امن قائم تھا، وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے، سیکیورٹی کا ازسر نو جائزہ لینا ہوگا۔

انہوں نے کہا کارروائی سے ثابت ہوتا ہے پاکستان کیخلاف بڑی سازش کی گئی، پہلے بھی دہشتگردی کی وجہ سے سرمایہ کاری متاثر ہوئی، اب پاکستان میں سرمایہ کارواپس آ رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں